شگر بازارکمیٹی کی تشکیل کوچار ماہ بیت گزر گئے لیکن ابھی تک اس کمیٹی کی حلف برداری اور باقاعدہ فنکشل نہ ہوسکا

imagesشگر(عابد شگری) صفائی اور مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے لاکھوں مالیت ڈس بن سڑنے لگا ۔تحصیلدار شگر محمد جعفر اور نائب تحصیلدار شگر محمد یوسف کی خصوصی دلچسپی کی وجہ اس سال جون میں ریسٹ ہاؤس شگر کی سبزہ زار پر منعقدہ ایک اجلاس میں شگر بازار کمیٹی کی نام سے شگر سنٹر کے تمام کاروباری حضرات کا متفقہ اور نمائندہ تنظیم کا قیام عمل میں لایاگیاتھا اور اجلاس میں بتایا گیا تھا کہ ایک ہفتے کے اندر کمیٹی کا باقاعدہ حلف برداری کی بعد کمیٹی اپنا کام شروع کرینگے۔لیکن چار ماہ کا عرصہ گزرنے کے باؤجود ابھی تک نہ ہی حلف برداری عمل آسکی اور نہ کمیٹی نے اپنا کام شروع کیا ہے۔جس کی وجہ شگر بازار میں ایک ادارے کی جانب سے لاکھوں روپوں کی مالیت سے نصب ڈس بن مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سڑنا شروع ہوگیا ہے۔ان کوڑا دانوں میں کوڑا کرکٹ کی ڈھیر ہونے کیساتھ ساتھ شگر بازار کی مناسب صفائی اور چوکیداری کا سسٹم بھی عمل میں نہیں آسکا ہے۔بازار کمیٹی کی حلف برداری کی رکاوٹ کی اصل وجہ انتظامیہ شگر اور بازار کمیٹی کی صدر کے آپس میں انڈر سٹینڈنگ کا نہ ہونا اور اختلافات کا بھی ہونا بتایا جاتا ہے۔جس کی وجہ سے انتظامیہ شگر کا اس کمیٹی میں دلچسپی کا فقداں نظر آرہا ہے۔

 

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *