ذرائع سے معلوم ہو ہے کہ نگر حلقہ نمبر4سے جا وید حسین کوسید جعفر شاہ کی جا نب سے پار ٹی ٹکٹ دینے میں جا وید حسین کی وفا داری کام آئی ہے

گلگت(رپورٹ،ایس یو ثا قب) با خبر ذرائع سے معلوم ہو ہے کہ نگر حلقہ نمبر4سے جا وید حسین کوسید جعفر شاہ کی جا نب سے پار ٹی ٹکٹ دینے میں جا وید حسین کی وفا داری کام آئی ہے جس کی وجہ سے پیپلز پا رٹی کے جیا لے ٹکٹ سے محروم ہو ئے اور نگر میں پیپلز پا ر ٹی کا شیرازہ بکھر گیا ۔ سید جعفر شاہ کا جا وید حسین کو پیپلز پا رٹی کا ٹکٹ دینے کے حو الے سے یہ با ت سامنے آئی ہے کہ جا وید حسین نے سید جعفر شاہ کے جج بننے میں بھا ری رقم خرچ کیا تھا اور اس میں قمرزالزمان کا ئرہ نے اپنا کمیشن سید جعفر شاہ کو معاف کر دیا تھا با قی کی رقم اپنے سے اوپر کے آقا وں کو پہنچا یا تھا ۔یہ با ت غلط ہے کہ جعفر شا ہ کو اس کی مر ضی کے بغیر بن پو چھے جج بنا یا گیا ہے سید جعفر شاہ کو سب معلوم تھا جس پر اس نے اپنے پو ئنٹ بڑ ھا نے کے لیئے اس سچ کو چھپا یا اور آج اس وفاداری کا ازالہ کر دیا اور پیپلز پا رٹی کے دیرینہ کا رکنوں کو پا رٹی کا ٹکٹ نہ دینا اس بات کی واضح دلیل ہے کہ سید جعفر شاہ کو پیپلز پا رٹی نہیں بلکہ اپنا مفاد عزیز ہے اس کی اس حر کت پر آج پیپلز پا رٹی کے جیا لے یہ کہ رہے ہیں کہ جعفر شاہ نے پو ری قوم کے ساتھ فراڈ کیا ہے اس سے سید مہدی شاہ ہی اچھا تھا جو کا رکنوں کی بات سنتا تھا جعفر شاہ پیپلز پا رٹی میں ڈکٹیٹر بنا ہوا ہے جو اکثیریتی رائے کے بجا ئے اپنے زاتی فیصلے مسلط کر رہے ہیں ۔ان وجوہات کی بناء پر پیپلز پا رٹی کے سینکڑوں جیالوں نے پی پی پی کو حال ہی میں خیر باد کہ دیا ہے اور آج ان جیا لوں کا بھی یہ سوال ہے کہ جب پیپلز پا رٹی میں برا وقت تھا تب جعفر شاہ نے جج کی کر سی سے محبت کی اور آج پی پی پی ضلع گلگت کا جنرل سیکڑیٹری گلاب شاہ آصف بھی سید جعفر شاہ کی بات کو ردی ٹو کری میں ڈال کر یشکن کے نام پر آزاد حیثیت سے الیکشن لڑ رہا ہے اس طرح بد عنوانیوں کو پی پی پی کے جیالوں نے اس سے قبل بھی اخبارات میں نشاندہی کی ہے اب کی بار کچھ اور ہی ہوا ہے جس پر پیپلز پارٹی فعال ہونے کے بجائے ختم ہوتی جارہی ہے ۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *