یلاب نے شگر میں ہر طرف تباہی ہی تباہی مچادی۔لوگ بڑے بے بسی کیساتھ اپنے جائداد،تیار فصل،کھیت،درخت اور باغات تباہ و برباد ہوتے دیکھتے رہ گئے۔

shigar baltistanسیلاب نے شگر میں ہر طرف تباہی ہی تباہی مچادی۔لوگ بڑے بے بسی کیساتھ اپنے جائداد،تیار فصل،کھیت،درخت اور باغات تباہ و برباد ہوتے دیکھتے رہ گئے۔خطرے کے پیش نظر سینکڑوں گھر خالی کرادئے جبکہ سڑک بلاک ہونے کی وجہ سے گلاب پور،تسر اور باشہ کے سینکڑوں دیہات کا سکردو اور دنیا سے زمینی رابطہ منقطع ہوگئے۔


شگر(عابد شگری)درجنوں گاڑیاں اور سینکڑوں مسافر خواتین و بچے دونوں طرف پھنس گئے۔تفصیلات کیمطابق شگر کے گاؤں وزیر پور میں متلو اور گونپہ کے درمیاں نالے میں گلیشر پھٹنے اور جھیل ٹوٹنے کی وجہ سے منگل کی علی الصبح آنے والی سیلابی ریلے نے گاؤں کا رخ کرلیا۔جس سے گونپہ گاؤں کے درجنوں مکانات،دکانات ،کھیت اور درخت زد میں آگئے۔سیلابی ریلے نے ہزاروں پھلدار اور غیر پھلدار درختوں ،آلو اور گندم کی تیار فصل اور پھلوں کے باغات اپنے لپیٹ میں لے لیا جس سے سینکڑوں کنال اراضی تباہ و برباد ہوگئے۔ سیلابی پانی اور تودے لوگوں کی گھروں میں بھی گھس گئے۔ لوگوں نے بھاگ کر اپنے جان بچائی۔مقامی افراد بے بسی کی عالم میں اپنے خوابوں کو چور چور ہوتے اور جائداد تباہ ہوتے دیکھتے رہ گئے۔ڈسٹرکٹ انتظامیہ کی جانب سے ڈپٹی کمشنر سکردو عابد علی،ممبر اسمبلی عمران ندیم،سابق صوبائی وزیر راجہ اعظم خان،مسلم لیگ (ن)شگر کے صدرطاہر شگری اور مسلم لیگ(ن) یوتھ ونگ کے صدر ایاز شگری نے موقع کا دورہ کیا اور عوام سے ہمدردی اور تعاؤں کی یقین دہانی کرائی۔آنے والے اطلاعات کیمطابق شگر کے یونین کونسل تسرمیں بھی دریائے شگر نے جعفر آباداور قائم آباد میں بڑے پیمانے پر تباہی مچادی ہے۔ لوگوں کے فصلیں اور زمینیں دریاء برد ہوگئے ہیں۔دوسری جانب یونین کونسل داسو کے گاؤں بیانگساپہ میں بھی پہاڑی تودہ گرنے سے آٹھ گھروں کو نقصان ہوا ہے۔ اور لوگ کھلے آسمان تلے رہنے پر مجبور ہیں۔جبکہ بوندو میں بھی سیلاب کی اطلاع پر خواتین و بچے گھروں کو خالی کرکے محفوظ مقامات پر منتقل ہوگئے ہیں۔shigar2

 

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *