سابق وزیراعلیٰ اور پیپلزپارٹی گلگت بلتستان کے سابق صوبائی صدر سید مہدی شاہ نے کہا ہے کہ اکبر تابان نے سکردو کے عوام کو چور کہہ کے ان کی توہین کی

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سید مہدی شاہ

وزیر اعلیٰ گلگت بلتستان سید مہدی شاہ

کراچی (ایس یو ثاقب) سابق وزیراعلیٰ اور پیپلزپارٹی گلگت بلتستان کے سابق صوبائی صدر سید مہدی شاہ نے کہا ہے کہ اکبر تابان نے سکردو کے عوام کو چور کہہ کے ان کی توہین کی ، کل تک یہی لوگ عوام سے ووٹ مانگنے کے لیے ان کے گھروں میں جا کر ان کی منت سماجت کر رہے تھے لیکن حکومت میں آنے کے بعد یہی لوگ جنہو ں نے انہیں دوٹ دیا وہ چور کہلائے اکبر تابان اپنا بیان واپس لے اور بلتستان کے عوام سے معافی مانگے ، ن لیگ کی حکومت آتے ہی سکردو میں بدترین لوڈ شیڈنگ شروع ہوئی ہے لوڈ شیڈنگ نے عوام کا جینا حرام کر دیا ہے عوام کو ووٹ دینے کا صلہ بے روزگاری اور لوڈ شیڈنگ کی صورت میں بھگت رہے ہیں لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کی کوشش کرنے کے بجائے اکبر تاباں اپنی نااہلی چھپانے کے لیے عوام کو کوس رہے ہیں اکبر تابان لوڈ شیڈنگ ختم کرائیے اور عوام کی توہین کرنے سے گریز کرے کلفٹن پل اور ہرگیسہ کے عوام بھی ہمارے بھائی ہیں گزشتہ ایک ماہ سے ہرگسہ کے علاقے میں بجلی کا نام و نشان تک نہیں مجبورا خواتین کو سٹرکوں پر آنا پڑا ، خواتین کا لوڈ شیڈنگ کے خلاف سڑکوں پر آنا ن لیگ کی عوام دشمن پالیسوں کا منہ بولتا ثبوت ہے لوڈ شیڈنگ مہنگائی اوربے روزگاری میں ریکارڈ اضافہ ہوا ہے ن لیگ کی سو دنوں کے اندر تبدیلی لانے کے تمام دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے انہوں نے کہا کہ ن لیگ والے سیاسی لوگ نہیں انہیں صرف ٹھیکے لینا آتا ہے پانچ سالوں میں کچھ کرنے کے بجائے ن لیگ کے وزراء اپنے من پسند لوگوں کو ٹھیکے دینے میں گزار دیں گے ، سیاست کو ٹھیکہ داری سمجھنے والے لوگ عوام کا استحصال کرنا بند کر ے ، پیپلزپارٹی عوامی جماعت ہے اگر عوامی مسائل کو جلد حل نہ کیا گیا تو عوام کو سٹرکوں پر لائیں گے ، سو دنوں کے اندر تبدیلی کا دعوا کرنے والوں کی کارکردگی کا پول کھل چکا ہے اب عوام انہیں مزید برداشت کرنے کی استطاعت نہیں رکھتے ، سو دنوں میں ن لیگ کے رہنماء سوائے لوگوں کو ٹھیکے دینے ، عزت داروں کی پگڑیاں اچھالنے بدمعاشی کرنے اور شریف لوگوں کو پٹننے کے علاوہ کچھ نہیں کر سکتے ، سیاست کو ٹھیکہ داری سمجھنے والے پانچ سالوں میں ٹھیکے لے کر واپس چلے جائیں گے ن لیگ کی حکومت میں اس کے علاوہ اور کچھ نہیں ہو سکتا ،سینئر وزیر نے عوام کو بجلی چور کہہ کر پوری قوم کی توہین کی ہے اکبر تابان بھول چکے ہیں کہ عوام کو اُن کو مسائل کے حل کے لیے ووٹ دیا ہے اپنی توہین کے لیے ووٹ نہیں دیا ، اکبر تاباں نے غیر زمہ دارنہ بیان دے کر ثابت کر دیا کہ وہ سیاسی آدمی نہیں ہیں ، ن لیگ کی حکومت آتے ہی عوام کے مسائل میں چار گنا اضافہ ہوا ہے عوام آٹے کے حصول کے لیے در بدر ہو رہے ہیں اور ساتھ ہی بے روزگاری کی شرع میں بھی خطر ناک حد تک اضافہ ہوا ہے اور ساتھ ہی گندم کی قمیت میں بھی اضافہ کرنے کے لیے پر تولے جار ہے ہیں ، عوام کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک روا رکھا جا رہا ہے ،عوامی مسائل کے حل کے لیے پیپلزپارٹی ہر فورم پر آواز بلند کرتی رہے گی ،انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی نے اپنے در اقتدار میں لوڈ شیڈنگ کے خاتمے کے عملی اقدامات کیے ،اب ن لیگ کی یہ زمہ داری ہے کہ وہ عوام کو ریلیف دینے کے لیے عملی اقداما ت کرے ۔ انہوں نے کہا کہ ن لیگ کی کئی کوئی حکومت نظر نہیں آرہی گلگت بلتستان کو بیورو کریسی چلا رہی ہے ، ہر جگہ بیور وکریسی نظر آرہی ہے بیور وکریسی کے زور سے بننے والی حکومت سے یہی توقع رکھی جا سکتی ہے ، عوام پر مہنگائی بم گرانے کی تیاری ہو رہی ہے ن لیگ گندم کی قیمت میں اضافہ کر کے عوام کے منہ سے نوالہ چھننے پر تلی ہوئی ہے ۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *