وادی شگر کی خبر

wadi shigir k khabrشگر(عابد شگری)ایران میں مقیم شگر کے معروف عالم دین سید علی موسوی نے اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ گزشتہ الیکشن میں عمران ندیم کا جیتنا خوش آئند ہے اور عمران ندیم کو الیکشن جیتنے کے بعد شگر کی عوام کی سب سے بڑی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ وہ عوام کی خوشحالی کیلئے دن رات ایک کرکے عوامی فلاح کے کاموں کو انجام دیں اور شگر کو ترقی کی نئی راہوں پر گامزن کریں۔ہمیں امید ہے کہ عمران ندیم ایک باصلاحیت قابل اور ذہیں سیاستدان اور عوامی نمائندہ ہے اور وہ اپنی صلاحیتون کا بھرپور استعمال کرتے ہوئے شگر کو ترقی کی نئی بلندیوں تک پہنچائیں گے۔

نوزائید ضلع شگر کیلئے نامزد ڈپٹی کمشنررحمان شاہ سولہ ستمبر کو شگر آکر اپنے عہدے کا باقاعدہ چارج سنبھالیں گے۔اس سلسلے تیاری مکمل کرلیا گیا ہے ۔ذرائع کیمطابق ڈپٹی کمشنر شگر رحمان شاہ ان دنوں وزیر اعظم پاکستان کی دورہ گلگت بلتستان میں مصروف ہونے کی وجہ سے شگر کے ٹو فیسٹیول میں شریک نہ ہوسکیں لیکن اختتامی تقریب میں وہ شامل ہونگے۔ان کی شگر آمد کے موقع پر ریسٹ ہاؤس شگر انہیں پولیس کی جانب سے گارڈ آف آنر اور سلامی دی جائے گی اور قومی پرچم کشائی کرینگے جس کیلئے تیاری مکمل کرلی گئی ہے۔ ڈپٹی کمشنر کیلئے آفس اور رہائش کیلئے لوگوں میں چی مگویاں جاری ہے جس کا حتمی کوئی فیصلہ ابھی تک نہیں ہوسکا ۔ڈپٹی کمشنر خود آکر اس بات کا فیصلہ کرینگے ۔ یہ بات بھی زیر گردش ہے کہ ڈپٹی کمشنر رہائش اور آفس تعمیر ہونے تک ریسٹ ہائس شگر کو آفس اور رہائش کیلئے استعمال کریں گے۔


شگرکے سڑکوں کی دیکھ بھال کیلئے صرف چند قلیاں سڑکیں کھنڈرات کا منظر پیش کرنے لگا۔مرکنجہ میں کئی جگہ پر کلوٹ ٹوٹنے کی وجہ سے خطرناک صورتحال اختیار کرگیا اور کسی بڑے حادثے کا خطرہ ہے۔تفصیلات کیمطابق شگر میں سڑکوں کی دیکھ بھال کیلئے متعین درجنوں روڈ قلیاں تنخواہ لینے کی باؤجود محکمے کے حکام بالا کی آشیرباد سے ڈیوٹی سے مستشنیٰ ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔اس وقت صرف چند قلیاں سڑکوں کی مرمت اور نگرانی کیلئے متعین ہے جبکہ درجنوں قلیاں سیاسی اثرروسوخ اور حکام بالا کی ملی بھگت کے ذاتی کاروبار اور اپنے گھروں میں رہ کر ٹنخواہ لینے میں مصروف ہیں۔ جس کی وجہ سے سڑکیں کھنڈرات کا منظر اختیار کرگیا ہے۔سڑکیں جگہ جگہ ٹوٹ چکا ہے جبکہ لوگوں نے اپنے مرضی سے کئی جگوں پر میٹل سڑک کو توڑ کرغیر قانونی سپیڈ بریکر بنایا ہوا ہے۔جبکہ محکمہ تعمیرات انہیں روکنے میں بے بس نظر آتا ہے۔مرکنجہ میں واقع ایک کلوٹ پچھلے سال ٹوٹنے کے بعد ابھی اسی حالت میں موجود ہے جسے ٹھیک کرنے کی ابھی تک کسی کو توفیق نہیں ہوئی جو کسی بھی وقت کسی بڑے حادثے کا پیش خیمہ ہوسکتا ہے۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *