سماجی تنظیم مرہم کی سماجی خدمات کو ایک سال پورا ہو گیا

MARHAMسکردو (پ ر) سماجی تنظیم مرہم کی سماجی خدمات کو ایک سال پورا ہو گیا ، سماجی تنظیم ایک سال سے ڈسٹرکٹ ہیڈ کواٹر ہستپال سکردو میں بغیر کسی امداد کے اپنی مدد آپ کے تحت غریب اور نادار مریضوں کا مفت علاج کروا رہی ہے مجموعی طور پر اب تک اس تنظیم سے ڈی ایچ کیو ہسپتال سکردو میں داخل 450 سے زائد مریض مستقید ہو چکے ہیں سا کے علاوہ سینکڑوں کے تعداد میں اوٹ ڈور مریض بھی مستفید ہو چکے ہیں اس کے علاوہ پاکستان کے دوسرے شہروں میں علاج کے غرض سے 20 سے 25 مریضوں مرہم نے اپنے اخرراجات پر بیجھا اور ان میں سے بہت سے مریض صحت یاب ہو چکے ہیں اور کچھ مریض تاحال ذیر علاج ہیں جبکہ مذکورہ تنظیم نے دیگر سماجی خدمت گاروں کی مدد سے ڈسٹرکٹ ہیڈکواٹر ہسپتال سکردو میں مریضوں کے تیمارداروں کے لیے مسافر خانہ کا قیام بھی عمل میں لایا ہے جس میں روزانہ کی بنیاد پر 15سے 20تیماردار ٹھہرتے ہیں ہال ہی میں مریضوں کی ضروریات کا خیال رکھتے ہوئے مرہم نے بلیڈ ڈونر سوسائٹی کا قیام بھی عمل میں لایا ہے جس میں پورے بلتستان سے بلیڈ ڈونر کی ایک بڑی تعداد نے رجسٹریشن کروائی ہوئی ہے ، مرہم بلیڈ ڈونر صرف مستحق مریضوں کو ہی خون کے عطیات دیتی ہے جبکہ نادار اور غریب مریضوں کو مختلف مخیر حضرات کے تعاون سے کھانے پینے کی چیزوں کے علاوہ ادویات مفت فراہم کی جاتی ہے اور ان کا مکمل علاج تنظیم کے زمے ہوتا ہے مرہم کے بانی و سرپرست سلیم رضا نے کہا ہے کہ مرہم کے ساتھ تعاون کرنے والے افراد کا مشکور ہوں ان کے خصوصی تعاون سے مرہم آج ایک اہم اور بنیادی ادارہ بن گیا ہے انہوں نے بتایا کہ ادویات کی فراہمی میں میڈیکل ریپ اور ڈاکٹرز کا خصوصی تعاون بھی انہیں حاصل ہے سکینہ ویلیفر کی جانب سے مرہم کو خصوصی تعاون حاصل ہے جس کے لیے ان کے مشکور ہیں جبکہ کمیونٹی اور صحافتی ادارے بھی مرہم کے ساتھ خصوصی تعاون کر رہے ہیں واضح رہے کہ نامور مذہبی سکالر و قائد بلتستان شیخ محمد حسن جعفری اور دیگر مذہبی و سماجی حلقوں نے مرہم کو مثالی سماجی تنظیم قرار دیا ہے ۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *