گلگت بلتستان آرڈر 2018 نافز :سٹيزن ايکٹ 1951 لاگو ، کونسل کے تمام اختيارات اسمبلی کو منتقل ہوگے

گلگت بلتستان آرڈر 2018 نافز :سٹيزن ايکٹ 1951 لاگو ، کونسل کے تمام اختيارات اسمبلی کو منتقل ہوگئے ، صوبائ حکومت ۔gilgit as
گلگت بلتستان کو آئين پاکستان کے شيڈول فور کے تحت ديگر صوبوں کے برابر اختيارات منتقل ہوگئے ، ايکنک ، ارساسميت ديگر تمام مالياتی اداروں ميں بھی نمائندگی مل چکی ہے ۔
مقامی شہريوں کو پاکستان کی تمام اعلی عدالتوں تک رسائ مل چکی ، ججوں کی تقرری کيلئے کميٹی بنے گی ، سپريم ايپليٹ کورٹ کا چيف جج سپريم کورٹ کا ريٹائرڈ جج ہی تعينات ہوگا ۔
قانون ساز اسمبلی اب گلگت بلتستان اسمبلی کہلائے گی ، چيف کورٹ ہائ کورٹ بن گئ ، وزير اعظم کے پاس وہی اختيارات ہونگے جو دوسرے صوبوں ميں حاصل ہيں ۔

آپ یہ صفحات بھی دیکھنا پسند کریں گے ۔ ۔ ۔

اپنی رائے کا اظہار کریں

Your email address will not be published. Required fields are marked *